کھانسی ایک بڑ ی پر یشانی

سر دی شر وع ہو تے ہی عمو ماً اکثر لوگوں کو کھانسی کی بیماری ہو جاتی ہے اور پھر وہ پور ا سیزن کسی سہیلی کی طر ح ساتھ رہتی ہے۔اکثر اوقا ت مسلسل اس بیماری سے بے چینی، تھکاوٹ اور الجھن جنم لیتی ہے۔ اکثر دیکھا جاتا ہے کہ جب مو سم بد لتے ہی جو لو گ اس بیماری میں مبتلا ہوجائیں پھروہ وقتاًفوقتاً سارا مو سم ہی اس بیماری کے زیر اثر رہتے ہیں۔
سانس کی دائمی تکلیف یا دائمی کھانسی میں مبتلا افر ا د کو سردیوں اور بہا ر کے مو سم کے آغاز میں ہی محتاط ہو جانا چا ہیے کیو نکہ پھیپھڑوں کی نالیو ں میں جمع ہو جانے والی بلغم نزلہ زکام کے جر اثیم کو جنم دیتی ہے۔جہا ں وہ تیز ی سے نشوونما پاتے ہیں۔یہ بلغم کبھی شد ید کھانسی میں بھی با ہر نہیں نکلتی اور نالیو ں کو جکڑے رکھتی ہے جو پھیپھڑوں کے مہلک انفیکشن کا سبب بنتی ہے۔شد ید کھانسی عمو ماً تین ہفتے تک بھی رہ سکتی ہے۔
عمو ماً لو گ کھانسی سے نجات کے لیے بازاری شر بتوں کا سہا را لیتے ہیںیہ دو ائیں دو طر ح سے اثر کر کے کھانسی روکتی ہیں۔
پہلی قسم میں کھانسی کے وہ شر بت شامل ہیں جو بلغم کے اخر اج میں مدد کر کے کھانسی روکتے ہیں۔
دو سری قسم کے شر بت کھانسی روکنے کے لیے استعمال کیے جاتے ہیں۔
ان سے وقتی طور پرکھانسی رک تو جاتی ہے لیکن اس کے ساتھ ہی درج ذیل امر اض بھی جنم لیتے ہیں۔
غنو دگی
بے خو ابی
اعصابی نظا م میں گڑبڑ
سانس لینے میں دشو اری
کو شش کر یں کہ ان ادویات سے بچا جا سکے لیکن اگر ممکن ہو تو اعتدال سے ان کا استعمال کر یں۔
ٹی بی کی وجہ سے بھی کھانسی ہو سکتی ہے ایسے لوگوں کو کھانسی کے ساتھ خو ن بھی آتا ہے اس لیے ایسے مر یض کو ٹی بی کا ٹیسٹ ضرور کر وانا
چا ہیے۔
نظا م تنفس میں پید ا ہو نے والے نقا ئص کی وجہ سے بھی کھانسی ہو سکتی ہے۔
گلے کی خر ابی،حلق کی سو زش، سانس کی نالی میں انفیکشن
پھیپھڑوں کی بیماری
کھانسی کا مسلسل ہو نا کسی مہلک بیماری کی وجہ بھی ہو سکتا ہے ۔
شہد کو نیم گر م پانی میں ڈال کر پینا سینے سے بلغم کا اخر اج کر تی ہے جس سے آسانی سے کھانسی رفع ہو جاتی ہے۔
نمک کے غر ارے کر نے سے اور نمک والے پانی کی بھا پ لینے سے گلے اور ناک کی سو زش میں کمی ہو تی ہے۔ ایسا کر نے سے نز لہ زکام کے جر اثیم اور سانس کی نالی پر حملہ کر نے والے جر اثیم بھی مر جاتے ہیں اس عمل سے نز لہ زکام پر قابو پایا جا سکتا ہے۔
ملھٹی چو سنے سے بھی کھانسی میں افا قہ ہو تا ہے ۔
دو عدد پیا ز لے کر آگ پر بھو ن لیں جب اس کا بیرونی چھلکا جل کر کا لا ہو جائے تو چھلکا اتار کر اندرونی حصہ رگڑ کر باریک کر لیں اور چھان کر اس کا پانی الگ کر یں پھر اس میں ہم وزن شہد ملا لیں اور صبح ، دوپہر اورشام استعمال کر یں ۔
ادرک کا رس نکال کر شہد میں ملائیں اور دن میں دو تین بار چا ٹنے سے بلغمی کھانسی میں افا قہ ہو گا۔
روزانہ رات کو دس بارہ بادام لے کر ان کو پو ٹلی میں باندھ کر گر م پانی کے بھا پ میں دم دے لیں۔دس منٹ بعد چھلکا اتار کر دو بارہ دم دے لیں ۔پھرگرم گرم بادام کھا لیں۔ ایک ہفتے استعمال کر نے سے خشک کھانسی میں افا قہ ہو گا۔
سفید خشخا ش اور مصر ی بر ابر مقدار میں لے کر اچھی طر ح پیس لیں اور دن میں دو سے تین بار چھ چھ ما شہ کھاتے رہنے سے کھانسی میں فر ق آئے گا۔

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں