چاکلیٹ چسکہ بھی فو ائد بھی

چا کلیٹ کے شو قین بچے ہی نہیں بڑے بھی اتنے ہی ہو تے ہیں۔ چا کلیٹ مز ے دار ہو نے کے ساتھ سا تھ صحت مند بھی ہو تی ہے۔ بعض لوگوں کا خیال ہے کہ سفید چاکلیٹ اکثر چینی سے بنی ہو تی ہے اور صحت کے لیے نقصان دہ ہو تی ہے۔ جبکہ بر اؤن چاکلیٹ کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ اس کے اندر توانائی چھپی ہو تی ہے جو زبان کو ذائقہ دینے کے ساتھ جسم کو کئی بیماریو ں سے بھی بچاتی ہے۔یہ قو ت مدافعت پید ا کر نے والے عنا صر کو مضبو ط کر تی ہے۔
مناسب مقدار میں اگر کھائی جائے تو دانتو ں کے لیے مفید ہے۔
جسم اور چہر ے کو صحت مند رکھتی ہے۔
ڈارک چاکلیٹ شو گر ہو نے سے روکتی ہے۔
اس کے کھانے سے عمر بڑھنے کا عمل سست ہو جاتا ہے۔
چہر ے کی جھریو ں کے لیے اس کا استعمال بہتر ین ہے۔
چاکلیٹ میں کو کا ، پو ٹاشیم، آئر ن ، زنک اور میگنیشیم پایاجا تا ہے جو دما غی صحت کوبہتر بنانے میں مدد گا ر ہو تا ہے۔
براؤ ن چاکلیٹ کی سب سے بڑی خو بی یہ ہے کہ یہ نقصان پہنچانے والے کو لیسٹر و ل کو کم کر نے کے ساتھ مفید کولیسٹرول کوبڑھاتی ہے۔
یہ جسم میں بلڈ پریشر کو نارمل رکھنے میں مدد دیتی ہے۔
جسم میں پو لی فینو ل کو بڑھا تا ہے جو خو ن میں مو جو د آکسیجن کی روانی کو بڑھا دیتا ہے۔
چاکلیٹ دما غ میں ’’ سیرو ٹین ‘‘ پیدا کر تی ہے۔ جس سے انسان کے اندر تازگی کا احساس پید ا ہو تا ہے اور ذہن دباؤ سے آزاد ہو تا ہے۔بر اؤن چاکلیٹ دل کی بیماریو ں سے بچنے میں اہم کر دار ادا کر تی ہے۔ اسے کھانے سے دل میں دوران خون بڑھ جاتا ہے اور شر یا نو ں کو سخت ہو نے نہیں دیتا ۔
روزانہ ایک چاکلیٹ کھانے والوں کی جگر کی مجمو عی صحت بہتر رہتی ہے۔
انسو لین کیخلا ف مز احمت کر کے ذیابیطس کے خطر ے کو کم کر تی ہے۔
چاکلیٹ کھانے سے فا لج کے خطر ے کے امکان کم ہو جاتے ہیں۔
آنکھو ں کی رو شنی کے لیے چاکلیٹ کا استعمال بہتر ین ہے۔
خو ن کی کمی کو پور ا کر کے اعصا بی کمزوری کو دور کر تی ہے۔
چا کلیٹ میں وٹامنز اور منر لز کی وافر مقدار ہو تی ہے جو جسمانی خلیو ں کو طا قت دیتی ہے۔
چاکلیٹ کینسر سے محفو ظ رکھنے میں مدد دیتی ہے۔
ڈائریا کے مر ض میں اس کا استعمال بہترین ہے۔
اس کا استعمال ایک حد میں بہتر ہے بے جا اور زیادہ استعمال صحت کے لیے نقصان دہ ہو سکتا ہے۔ اس کا بہت زیادہ استعمال موٹاپے کودعو ت دے سکتاہے۔
چاکلیٹ منشیات کی طر ح اپنا عا دی بنا لیتی ہے۔ اس میں کچھ ایسے ایسڈ مو جود ہو تے ہیں جو طبی نقصانا ت کا باعث بن سکتے ہیں۔ خا ص طور پر گر دے کی پتھر ی بننے میں مدد دیتی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں