پیٹ کی چر بی کم کر یں تیل سے ۔۔۔۔ ما ہر ین

بڑھے ہو ئے وزن سے ہر دو سرافردپر یشان ہے اوراس پریشا نی کوکم کرنے کے لیے نت نئے ٹوٹکے اور ورزشوں کا سہارالیتے ہیں۔ پیٹ کے گردچربی کا مسئلہ عموماً کڑی ورزش سے بھی حل نہیں ہو تا۔ بہت عر صہ ورزش کر نے کے بعد ایک آدھ پو نڈ میں کمی واقع ہو تی ہے۔ لیکن اب سائنسدانوں نے اس سے نجات حاصل کر نے کے لیے نت نئے طر یقے متعارف کر وائے ہیں جن پر عمل کر تے ہو ئے وزن میں کمی کی جا سکتی ہے۔
ڈیلی ا سٹا ر کے مطا بق زیادہ تر لو گ پیٹ کی چر بی سے بچنے کے لیے مکھن اور گھی کے بجائے سو رج مکھی اور سویابین کے تیل کا استعمال کرتے ہیں۔ لیکن سائنسدانوں نے نئی تحقیق میں بتایا ہے کہ پیٹ کی چر بی سے نجات کے لیے ناریل کا تیل سب سے بہترین ہے۔ اگر ہم ناریل کے تیل میں کھانا پکانا شروع کر دیں تو اس سے پیٹ کی چر بی سے نجات مل جا ئے گی اور سخت ورزش بھی نہیں کر نی پڑے گی۔ نہ ہی ڈائٹنگ کا سہارا لینا پڑے گا۔
یو نیو رسٹی سنیر ملا ئیشیا کے سائنسدان نے اس تحقیق میں بیس افر اد پر تجر بہ کیا اور انھیں دو گروپوں میں تقسیم کیا گیا۔ ایک گروپ کو بارہ ہفتے تک ناریل کے تیل میں پکا کرکھانا کھلایا گیا۔جبکہ دو سرے گروپ کو گھی اور تیل میں پکے کھانے کھلائے گئے۔ بارہ ہفتوں بعد ان کے پیٹ کی چر بی کا معا ئنہ کیا گیا تو ناریل کا تیل کھانے والے افر اد کی کمر ایک ایک انچ کم ہو چکی تھی۔ جبکہ دو سرے گر وپ کی کمر کی چر بی میں اضا فہ دیکھا گیا۔
سائنسدانوں نے اپنی تحقیق میں لکھاہے کہ ناریل کا تیل میٹا بولزم کوتیزکرتا ہے۔ جس کے نتیجے میں چربی پگھلتی ہے۔ماہرین کاکہنا ہے کہ وزن کم کرنے کے خو اہشمند افر اد اپنے کھانوں میں ناریل کے تیل کا استعمال شروع کر دیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں