پر دہ اور عبا ئیہ

کچھ عر صہ سے خو اتین میں پر دہ کر نا ایک فیشن بن گیا ہے۔ پر دے کا رواج بڑی تیزی سے پھیل رہا ہے۔ خو اتین ،لڑ کیا ں اور حتی کہ بچیا ں بھی نت نئے ڈئزائن کے کپڑے پہن کر خو شی محسوس کر تی ہیں۔ جیسے ہی پر دے نے عبا ئے کی صورت اختیا ر کی نت نئے ڈیز ائن اور رنگ کے عبا ئے مارکیٹ میں آگئے۔ اب ہو ا یہ کہ اچھا، خوبصورت اور منفر د عبا ئے کے چکر و ں میں بیچاری خو اتین گھن چکر بن کر رہ گئی ہیں۔
ِ پر دہ کر نے والی خو اتین ہی نہیں بلکہ اکثر خو اتین محض شو قیہ بھی عبا ئیہ پہننے لگی ہیں۔ خو اتین کی اس دلچسپی کو مد نظر رکھ کر نت نئے ڈیز ائن کے عبائے متعارف کر وائے جا رہے ہیں۔ جس سے خو اتین میں عبا ئے کا شو ق پید ا ہو رہا ہے۔
بر قع ، عبائے میں اس وقت بدلا جب عربی طر ز کے عبا ئے معتا رف کر ائے گئے۔ یہ عبائیہ روایتی طرزوں سے ہٹ کر نہا یت خوبصورت اور دلکش تھا ۔ اس نئے طر ز کے اضا فے نے خو اتین کو تیزی سے اپنی جانب مبذول کیا اور صر ف ضرور ت کے تحت استعمال ہونے والی یہ چیز فیشن کا حصہ بن گئی۔ اور پر د ے کا نا م بد ل کر عبا ئیہ رکھ دیا گیا ۔
اس وقت سب سے زیادہ فیشن میں عربی طر ز کے عبائے ہیں۔
عبا ئے میں مو سم فیشن کے مطا بق میٹر یل استعمال کر نے کا روجحان تیزی سے بڑھ رہا ہے ۔پہلے خواتین صر ف کالے رنگ کے عبائے استعمال کر تی تھی ۔لیکن اب خو اتین عام استعمال کے علا وہ تقریبات کے لیے بھی اپنے کپڑوں کے وم رنگ عبائے استعمال کر تی ہیں۔اور اچھی بات یہ ہے کہ اب کے ڈیز ائن کیے حجابوں کو سیٹ کر نے کے لیے ڈھیڑ ساری پنو ں کا استعمال نہیں کر نا پڑتا۔اب ریڈی ٹو وےئر عباؤ ں کی وجہ سے اتارنے اور پہننے میں آسانی ہو تی ہے۔
جس طر ح لبا س کے لیے نت نیا کپڑا سامنے آ رہا ہے اسی طر ح عبائے کے لیے بھی خوبصورت رنگو ں اور کپڑے کے عبائے متعارف ہو رہے ہیں جن میں شفعو ن، لان،کو رین فیدرلائٹ،اور ملا ئی جا رجیٹ کا استعمال عا م ہے۔
آج کل پلین فیبرک ہی نہیں بلکہ فلورل پر نٹس بھی کافی اٍن ہیں۔گرمیو ں کے لیے خا ص کر سلیو لیس نیٹ کے عبائے متعارف کر ائے گئے ہیں۔ جو کہ لڑکیو ں میں بے حد مقبول ہو رہے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں