غذ ا رکھے گی پتے کی پتھری سے محفوظ۔۔۔۔۔۔ماہرین

بر منگھم (پاکستان نیو ز) پتے کی پتھری انتہائی تکلیف دہ بیماری ہے۔جس کا علا ج پیچیدہ اور مہنگا ہے۔ یہ بیماری لا حق ہوجائے تو اس سے جان چھڑانا انتہائی مشکل امر ہے۔ ما ہر ین صحت نے اس بیماری سے چھٹکارے کے لیے کچھ غذاؤں کو اہم قر ار دیتے ہو ئے کہا ہے کہ ان غذاؤں کا استعمال پتے کی پتھری کو بڑھنے سے روکتا ہے۔
پتے کی پتھری کو لیسٹرول کے کر سٹل بننے سے وجود میں آتی ہے۔ مر غن غذ اؤں کا استعمال،وزن کا زیا دہ ہو نا، جگر کی خرابی یا ذیا بیطس کا مر ض پتے کی پتھری کے امکان کو بڑ ھا دیتا ہے۔
ما ہرین صحت نے اس ضمن میں چار غذاؤں کو بہترین قر ار دیا ہے۔ یہ پتھری کو بڑھنے نہیں دیتے۔ اگر پتھری بن چکی ہو تو اسے تحلیل کر دیتے ہیں۔ فا ئبر سے بھر پور غذائیں پتھر ی کو بڑھنے سے روکتی ہیں۔ان غذاؤں میں مٹر، پھلیا ں اور سامل انا ج شامل ہیں۔
سامن مچھلی ایسی غذ ا ہے جو پتے کی پتھری کو بڑھنے سے روکتی ہے۔اس میں اومیگا تھر ی فیٹی ایسڈ بکثر ت پائے جاتے ہیں جو جگر اور پتے کی پتھر ی کے بننے کے امکا ن کو کم کر دیتے ہیں۔
وٹامن سی سے بھر پور غذائیں پتے میں پتھری کو بننے سے روکتی ہیں جبکہ اس کی کمی پتھری بننے کا با عث بنتی ہے۔ بادام پتے میں پتھری کو بننے سے روکتا ہے۔ با دام میں میگنیشیم اور کیلشیم پایا جاتا ہے جو جگر کے کو لیسٹرول کے تو ازن کو بر قر ار رکھتا ہے۔اس کے علاوہ دہی کا استعمال بھی پتھری کو بننے نہیں دیتا۔
ما ہر ین کا کہنا ہے کہ پتھری کی تکلیف کو بر داشت کر نے سے بہتر ہے کہ آپ ان غذاؤں کو اپنی خوراک میں شامل کریں تا کہ پتے کی پتھری سے محفو ظ رہا جا سکے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں