دیگر ا دو ائی انسانی جان کی دشمن۔۔۔۔ ما ہر ین

نو جو ان مر دوں میں آج کل اس کا استعمال بڑ ھ رہا ہے۔ مر دانہ کمزوری کو دور کر نے والی اس دو ائی کو مو ت کا پیمبر تصور کیا جا رہا ہے۔ اب تک کی تحقیق کے مطا بق اس کا استعمال کر نے سے نو جو انوں میں مو ت کی شر ح بڑھ رہی ہے۔ بر طانیہ میں گزشتہ سال انیس افر اد کی مو ت اس دو ائی کے استعمال سے ہو ئی۔ تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ اس دو ائی سے پہلے بھی مو ت کی خبر سامنے آتی رہی ہے لیکن پچھلے کچھ سالوں سے اس میں اضا فہ دیکھنے میں آیا ہے۔ مردانہ کمزوری کو دور کر نے والی اس دو ا میں مردوں کو اکضا نہ صر ف کمزور ہو جاتے ہیں بلکہ ان کی مو ت بھی واقع ہو جاتی ہے۔اس اضافے کو دیکھتے ہو ئے اس دو ائی پر پابندی لگا دی گئی ہے۔
ما ہرین کا کہنا ہے کہ اس دو ائی سے متعدد پیچیدگیاں دیکھنے میں آئی ہیں جن میں سر چکر انا، یا داشت کی کمزوری، نیند کی خر ابی اور جنسی مسائل شامل ہیں۔ ویا گر ا کے منفی اثر ات کا شکا ر ہو نے والے مردوں کی اکثر یت کی عمر پچاس سے ساٹھ سال تک بتائی گئی ہے۔
ما ہرین صحت نے سختی سے اس دو ائی کی فروخت پر پابندی عائد کی ہے۔ اس دو ائی کے ان سا ئیڈ افیکٹ کی وجوہات پر ابھی تک تحقیقات سامنے نہیں آئیں۔ ان پر ابھی کا م جاری ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں