خو د کو تو انا رکھیں بیٹھنے کے انداز سیکھیں

لوگوں کی اکثر یت خو د کو تو انا اور صحت مند رکھنے کے لیے جم جاتی، ورزش کر تی اور صحت بخش کھانوں پر تو جہ دیتی ہے لیکن صر ف اپنے بیٹھنے کے انداز و اطور پر ہی ایک نظر نہیں ڈالتے۔ لیکن اگر آپ اپنے بیٹھنے کے انداز پر ہی نظر ڈال لیں تو آپ کو خو د پر اتنی مشقت کر نے کی ضرورت نہ پڑے۔ہم میں سے بہت سے لوگوں کا کام بیٹھ کر کر نے والا ہوتا ہے اگر ہمیں بیٹھ کر کام کر نے کے لیے مناسب جگہ نہ ملے تو ہم نہ صر ف جلد تھکن کا شکار ہو جاتے ہیں بلکہ بہت سی بیماریو ں میں بھی مبتلا نظر آتے ہیں۔ اسی طر ح کچھ لو گ غلط انداز میں کھڑے ہو تے ہیں جس سے جسم میں کھنچاؤ پیدا ہو تا ہے جو کمر دردکا سبب بنتا ہے اس کی نسبت اگر ہم کھڑے ہو نے کے انداز میں ورزش کا انداز اپنائیں تو خو د کو توانا رکھ سکتے ہیں۔
اگر ہم ٹھیک طریقے سے بیٹھتے ہیں تو اس سے خون کی گر دش درست رفتار سے ہو تی ہے۔
مسلز اور جوڑ مکمل طور پر کام کر تے ہیں۔
درست انداز میں سانس لیا جاتا ہے۔
اندرونی اعضاء پوری طر ح کام کر تے ہیں۔
اگر درست انداز سے نہ بیٹھا جائے تو صحت کے حو الے سے پیچیدگیا ں پید ا ہو سکتی ہیں۔ اس حو الے سے جو سب سے خر اب عمل ہے اسے ”اپر کر اس سَنڈرم“ اور لو ئر کر اس سنڈرم کہتے ہیں۔ اپر کر اس کا شکار بندہ اپنے کندھے گو ل رکھتا ہے اور اسکا سینہ ٹائیٹ ہو تا ہے اور جسم خم لیے ہو تا ہے۔ ایسے شخص کو چاہیے کہ اپنے سینے کی ورزش کر ے اور دن میں کئی بار اسے پھیلائے اور سکیڑے اور خو د کو سیدھا رکھنے کے بھی ورزش کر ے۔ اگر ایسا نہیں کر ے گا تو اس کے کندھے اور گر دن مسائل کا شکار ہو گی۔
لو ئر کر اس سنڈرم کا شکار افر اد اپنی پشت کو زیادہ جھکا لیتا ہے اور اس کی کمر کمزور سی لگتی ہے۔ اس کی پشت سخت ہوتی ہے اور نیچے کے مسلز کھنچ جاتے ہیں۔ ایسے شخص کو کمر کے مسلز کو کھینچنے والی ورزش کر نی چا ہیے۔ اس کے علاوہ پیٹ کو درست رکھنے کی بھی ورزش کی جائے۔
بیٹھتے وقت پنجے پر زور نہ دیں اور نہ پاؤ ں کر سی کے نیچے رکھیں۔ ٹانگوں کو کر اس میں نہ رکھیں۔
گھٹنے کا نچلا حصہ کر سی پر دباؤ نہ ڈالے گھٹنے کا نچلا حصہ اور کر سی کے درمیان فرق رکھیں تا کہ خو ن کی گر دش میں رکاوٹ نہ ہو۔
ران کو فرش کے متو ازی رکھیں۔ایسی جگہ پر نہ بیٹھیں جس میں ہپ اندر کو دھنس جائے۔
کمپیو ٹر پر کام کر تے ہو ئے کمر سیدھی رکھیں۔
سینہ اوپر کی جانب کر کے بیٹھیں۔
مسلسل بیٹھ کر کام کر نے سے اجتناب کر یں۔ ہر پندرہ منٹ بعد اٹھ کر پا نچ منٹ کی چہل قدمی کر یں۔ اس سے مسلز پر پڑنے والے دباؤ میں کمی آجائے گی۔
اس سے جسم مو ٹاپے کا شکار نہیں ہو گا اور تھکن سے محفو ظ رہے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں