بچوں کی ذہنی نشو ونما کے لیے غذا

بچوں کی اگر بہتر نشو ونما کی بات کی جائے تو سب سے پہلے ان کی ذہنی نشو ونما کی بات آتی ہے۔ بچوں کی اچھی پرورش اور صحت کے لیے ضروری ہے کہ ان کی ذہنی نشوونما پر پوری تو جہ دی جائے۔اچھی ذہنی نشوونما کے لیے ضروری ہے کہ ان کی خوراک پر تو جہ دی جائے۔
حقیقت میں ذہن ایک بھو کا آرگن ہے جو ان نیو ٹرین کو جذب کر تا ہے جو ہم کھاتے ہیں۔
مچھلی
فیٹی فش میں اومیگا تھری پایا جاتا ہے جو بڑھتے بچوں کے دماغ کے لیے بے حد فائدہ مند ہے۔مچھلی کا استعمال ذہن کو تیز کر تا اور ذہنی نشوونمامیں اضافہ کر تاہے۔ اس لیے بچوں کو ہفتے میں کم سے کم تین بار مچھلی ضرور دیں۔
انڈے
انڈوں میں پروٹین پائی جاتی ہے جو ذہن کی بہتر نشو ونما کر تی ہے۔ اس کے علاوہ یہ یا داشت کو تیز کر تے ہیں۔ بچوں کو روزانہ ناشتے میں انڈہ لازم دیں۔
پینٹ بٹر
مو نگ پھلی اور مو نگ پھلی کے مکھن میں وٹامن ای، اینٹی آکسیڈنٹ پا ئے جاتے ہیں جو ذہنی نشو نما کے لیے بے حد ضروری ہے۔اس لیے بچوں کو پینٹ بٹر لازم دیں۔
پھلیاں
دماغی نشو ونما اور صحت کے لیے بچوں کو اناج اور پھلیاں لازم دیں۔ ان میں وٹامن بی وافر مقدار میں پائے جاتے ہیں جو ذہن کی نشوونما کر تے ہیں۔
سبزیاں اور پھل
سبزیاں اور پھل بچوں کی ذہنی نشو ونما میں اہم کر دار ادا کر تے ہیں۔ اس لیے بچوں کی غذا میں سبزیاں اور پھل لازم شامل کر یں۔
دودھ اوردہی
دودھ اور دہی کا با قاعدہ استعمال بچوں کی ہڈیوں کو مضبو ط کر تا اور ان کے ذہن کو مناسب خوراک مہیا کر کے یاداشت کو تیز کر تا اور ذہنی قوت میں اضا فہ کر تا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں