اسپرین کا استعمال نقصان دہ ہے۔۔۔ تحقیق

سائنسدانوں نے خبردار کیا ہے کہ جو لو گ فالج کے حملے سے بچنے کے لیے اسپرین کا استعمال کر تے ہیں وہ اپنی صحت کو فائدے کے بجائے نقصان سے دو چار کر تے ہیں۔ ایک لاکھ مریضو ں پر کیے گئے جائزے کے مطابق بتایا گیا ہے کہ ایسے لو گوں میں جسم کے اندر خو ن کارساؤ کا خطرہ زیادہ ہو جاتا ہے۔
بر طانو ی ما ہر ین کی قیا دت میں کیے گئے جائزے کے مطابق صرف انہی لوگوں کو اسپرین استعمال کر نی چا ہیے جنہیں یا تو دل کا عا رضہ ہو یا فالج ہو چکا ہو۔ اسپر ین دل اور فالج کے مریضوں کے لیے مفید ہے۔یہ دو ا خو ن کو شریانوں میں جمنے سے روکتی ہے۔ یہ دوا پہلے سے مو جو د خو ن کے لو تھڑوں کو کم کر کے فالج اور دل کے دورے کے امکان کو کم کر دیتی ہے۔
ماہرین نے ایک لاکھ دو ہز ار چھ سو اکیس مریضوں کے اعدادو شمار کا جائز ہ لیا۔ ان کے مطابق اسپرین استعمال کر نے والے افراد میں دل کے دورے میں بیس فیصد کمی دیکھی گئی۔
اسپرین کے استعمال سے بڑے پیمانے پر فا ئدہ حاصل نہیں کر سکتے۔ یہ یقینا زندگی میں اضا فہ نہیں کر تی۔اگر آپ بڑے پیمانے پر فائدے کے خو اہش مند ہیں تو آپ کو زیادہ نقصان پہنچ رہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں