آلو ہائی بلڈ پریشر کا سبب۔۔۔تحقیق

ارورڈ: بر ٹش میڈ یکل جر نل کی نئی تحقیق کے مطابق ہفتے میں چار یا اس سے زیادہ مر تبہ آلو کو بطور خوراک استعمال کر نے سے ہائی بلڈ پریشر کے امکا ن گیارہ فیصد بڑھ جاتے ہیں۔جبکہ فر نچ فر ائز کھانے سے اس مر ض کے امکان سترہ فیصد بڑ ھ جاتے ہیں۔ ما ہرین نے اس تحقیق میں یہ بھی دریافت کیا ہے کہ آلوکی جگہ کچی سبزیا ں کھانے سے ہائی بلڈ پریشر کا امکا ن سات فیصد کم ہو جاتا ہے۔ہائی بلڈ پریشر بڑھنے کی وجہ آلوؤں میں گلیکیمک انڈیکس جسے جی آئی کہتے ہیں کی کثیر مقدار ہے۔ زیادہ جی آئی کی حامل اشیاء زیادہ اور تیز ی سے تو انائی فر اہم کر تی ہیں۔ جس کی وجہ سے بلڈ شو گر تیزی سے بڑھتا ہے۔ اس تحقیق میں گزشتہ بیس سالوں پر مشتمل ۰۰۰۷۸۱افر اد کا ڈیٹا استعمال کیا گیا جس میں انکا وزن بھی مد نظر رکھا گیا۔ ابلے اور پکے ہو ئے ہر قسم کے آلو ؤں کو بطور خوراک استعمال کیا گیا جس میں صر ف کرسپی چپس کھانے والوں کو بلڈ پریشر نہیں ہو تا۔ ٗٗٗٗٗٗٗٗٗٗٗٗٗٗٗٗٗٗٗٗٗ
جو خو اتین ہفتے میں دو سے چار با ر آلو کھاتی ہیں۔ ان میں ذیا بیطس ہو نے کا خطر ہ ستائیس فیصد ہو تا ہے۔چاہے ان کا وزن کم ہو یا زیادہ۔پانچ با رآلو کھانے والی خو اتین کو یہ خطرہ پچاس فیصد زیادہ ہو تا ہے۔
اس لیے ما ہر ین زیادہ استعمال سے منع کر تے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں